الجمعة، 24 ذو الحجة 1441| 2020/08/14
Saat: (M.M.T)
Menu
القائمة الرئيسية
القائمة الرئيسية

المكتب الإعــلامي
ولایہ پاکستان

ہجری تاریخ    23 من ذي القعدة 1441هـ شمارہ نمبر: 81 / 1441
عیسوی تاریخ     منگل, 14 جولائی 2020 م

پریس ریلیز

حکمران خطے میں بھارتی اثرورسوخ کوتقویت پہنچانےکے لیے واہگہ بارڈرکھول رہے ہیں لیکن اپنی منافقت چھپانے کیلئے کشمیری شہداء کو خراج تحسین پیش کررہے ہیں

 

جس دن پاکستان کے وزیر اعظم نے یہ اعلان کیا کہ، "13 جولائی،1931 کے شہداء موجودہ کشمیری مزاحمت کے آباؤ اجداد تھے"، اسی دن پاکستان کے دفتر خارجہ نے یہ اعلان بھی کیا کہ پاکستان افغانستان کو اس بات کی اجازت دے رہا ہے کہ وہ 15 جولائی، 2020 سے واہگہ بارڈر کے ذریعے اشیاء بھارت بھیج سکتا ہے۔  پس جہاں ایک جانب بھارت کے خلاف پورے صبرو استقامت کی ساتھ مزاحمت جاری رکھنے پر  کشمیر کے مسلمانوں کی تعریف و تحسین کی جارہی ہے، وہی پر دوسری جانب کشمیری مسلمانوں کی پیٹھ میں چھرا گھونپتے ہوئے پاکستان کے حکمران بھارت کو تجارت بڑھانے میں سہولتیں دے کر اس کے علاقائی اثرورسوخ کو تقویت دے رہے ہیں ۔   5 اگست 2019 سے، جب مودی نے زبردستی مقبوضہ کشمیر کا بھارت سے الحاق کا اعلان کیا تھا، پاکستان کے حکمرانوں نے بھارتی قبضے کیلئے سہولت کار کا کردار ادا کرتے ہوئے لائن آف کنٹرول پر پہرہ سخت کر کے اس بات کو یقینی بنایا کہ مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں  کی تحریک مزاحمت ہر قسم کی کلیدی امداد سے محروم ہو جائے، جس کی انھیں شدید ترین ضرورت ہے،  تاکہ مودی کی کشمیر پر گرفت مضبوط ہو سکے، جبکہ دوسری جانب "نارملائزیشن" کے نام پر بھارت کے ساتھ سرحدوں کو کھولا جارہا ہے  تاکہ خطے میں اس کے اثرورسوخ میں اضافہ ہو۔

 

                  اے پاکستان کے مسلمانو!

پاکستان کے موجودہ حکمران اسلام اور مسلمانوں کے ساتھ وفاداری کاڈھونگ رچاتے ہیں جبکہ وہ وفاداری امریکہ کے ساتھ نبھاتے ہیں جو مسلسل اصرار کرتا ہے کہ پاکستان خطے میں بھارت کے اثرورسوخ کو بڑھانے میں سہولت کاری کا کردار ادا کرے تاکہ خطے میں چین  اور اسلامی نشاۃ ثانیہ کا مقابلہ کرسکے۔  یہ حکمران بڑے زور شور سے بھارتی مظالم کے بارے میں ٹویٹس کرتے ہیں لیکن اس کے ساتھ ساتھ ہماری افواج کو لائن آف کنٹرول کو پار کر کے مقبوضہ کشمیر کو آزاد کرانے سے روکتے ہیں۔ یہ حکمران جنگ سے فرار اختیار کرنے کے لیے کمزور معیشت کا بہانہ تراشتے ہیں جبکہ بھارت کی تجارت پر پابندیاں لگانے کی بجائے اس کی تجارت کو بڑھانے میں سہولت کار کا کردار ادا کر کے خطے میں اس کے اثرورسوخ کو پھیلا رہے ہیں۔  یہ حکمران کہتے ہیں کہ ایٹمی جنگ کے خطرے کے باعث وہ جنگ نہیں کر سکتے لیکن مقبوضہ کشمیر کو آزاد کرانے کا بہترین موقع ضائع کررہے ہیں جبکہ بھارت ایٹمی چین کے ساتھ تناؤ کی کیفیت میں ہے۔

 

            اے افواج پاکستان میں موجود مسلمانو!

باجوہ-عمران حکومت، بجائے کہ دشمن کے خلاف  جہاد کیلئے آپ کے عزم کو بڑھائے جن کو شکست دینے کی بھرپور اہلیت کے آپ حامل ہیں، الٹا وہ آپ پر عائدجہاد کےفرض سے آپ کو روک رہی ہے جبکہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا،

مَنْ مَاتَ وَلَمْ يَغْزُ وَلَمْ يُحَدِّثْ نَفْسَهُ بِالْغَزْوِ مَاتَ عَلَى شُعْبَةٍ مِنْ نِفَاق

"وہ شخص جس نے نہ عملاً جہاد کیا  اورنہ ہی کبھی اس کی نیت کی تو وہ نفاق کی قسموں میں سے ایک قسم پر مرا"(ابو داود)۔

 

یہ منافق حکمرانوں آزاد کشمیر پر حملے کو سرخ لکیر (RedLine) قرار دیتے ہیں جبکہ سرخ لکیر تو مقبوضہ کشمیر ہے کیونکہ اللہ سبحانہ و تعالیٰ نے فرمایا،

وَاقْتُلُوهُمْ حَيْثُ ثَقِفْتُمُوهُمْ وَأَخْرِجُوهُمْ مِنْ حَيْثُ أَخْرَجُوكُمْ

"اور ان کو جہاں پاؤ قتل کردو اور جہاں سے انہوں نے تم کو نکالا ہے  وہاں سے تم بھی ان کو نکال دو"(البقرۃ، 2:191)۔ 

 

مودی نے لائن آف کنٹرول کی ہزار وں  بار بھاری ہتھیاروں سے خلاف ورزی کی ہے لیکن دوغلی باجوہ-عمران حکومت آپ کو اینٹ کا جواب پتھر سے دینے سے روکتی ہے اور دشمن کی جارحیت کے سامنے "تحمل" کی رٹ لگائے رکھتی ہے جبکہ رسول اللہ ﷺ نے فرمایا،

لاَ هِجْرَةَ بَعْدَ الْفَتْحِ وَلَكِنْ جِهَادٌ وَنِيَّةٌ وَإِذَا اسْتُنْفِرْتُمْ فَانْفِرُوا

" مکہ فتح ہونے کے بعد(اب مکہ سے مدینہ کے لیے) ہجرت باقی نہیں ہے ‘ لیکن خلوص نیت کے ساتھ جہاد اب بھی باقی ہے، اس لیے جب تمہیں جہاد کے لیے بلایا جائے تو نکل کھڑے ہو"(مسلم)۔

 

منافق حکمرانوں کو ہٹا دو اور نبوت کے نقش قدم پر خلافت کو بحال کرو تا کہ بلاآخر پھر آپ کے حکمران اور فوجی کمانڈر آپ جیسے ہی ہوں۔ اپنی نصرۃ حزب التحریر کے امیر شیخ عطا بن خلیل ابو الرشتہ کو فراہم کریں تا کہ با عزت شہادت کے حصول کی کوشش میں ایک کے بعد ایک کامیابی حاصل کرنے کے لیے آپ کی قیادت کی جائے۔   

 

ولایہ پاکستان میں حزب التحرير کا میڈیا آفس

المكتب الإعلامي لحزب التحرير
ولایہ پاکستان
خط وکتابت اور رابطہ کرنے کا پتہ
تلفون: 
http://www.hizb-ut-tahrir.info
E-Mail: HTmediaPAK@gmail.com

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.

دیگر ویب سائٹس

مغرب

سائٹ سیکشنز

مسلم ممالک

مسلم ممالک