الجمعة، 19 ربيع الثاني 1442| 2020/12/04
Saat: (M.M.T)
Menu
القائمة الرئيسية
القائمة الرئيسية

المكتب الإعــلامي
ولایہ پاکستان

ہجری تاریخ    12 من ربيع الاول 1442هـ شمارہ نمبر: 23 /1442
عیسوی تاریخ     بدھ, 28 اکتوبر 2020 م

پریس ریلیز

ہندو ریاست مقبوضہ کشمیر میں ہندو آبادکاروں کی بستیاں آباد کررہی ہے تا کہ کشمیر میں مسلم آبادی کو اقلیت میں تبدیل کردیا جائے اور باجوہ-عمران حکومت افواج پاکستان کو حرکت میں نہ لا کر ہندو ریاست کو اپنے مقصد میں کامیابی حاصل کرنے کا پورا موقع فراہم کررہی ہے

 

مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کر کے اسے بھارتی یونین کا حصہ بنانے کے 5 اگست 2019 کے بھارتی عمل کی حمایت کر کے امریکا نے پاکستان اور مسلم امت سے اپنی کھلی دشمنی کا ثبوت فراہم کیا تھا۔ ہندو ریاست کے سامنے ہمیں مزید کمزور کرنے کے لیے امریکا نے 27 اکتوبر 2020 کو بھارت کے ساتھ ایک معاہدہ کیا ہے جس کے تحت وہ اسے حساس سٹلائیٹ ڈیٹا فراہم کرے گا جس کے نتیجے میں مزائلوں کے ذریعے پاکستان کے خلاف حملہ کرنے کی بھارتی صلاحیت میں اضافہ ہوجائے گا۔ امریکی حمایت سے حوصلہ حاصل کر کے اسی دن، یعنی 27 اکتوبر 2020 ، کو ہندو ریاست نے"یونین کے علاقے، جموں و کشمیر کی تنظیم نو(مرکزی قوانین کی موافقت) کا تیسرا حکم 2020" جاری کیا    ، جس کے بعد بھارتی شہری مقبوضہ کشمیر میں جائدادیں خرید سکیں گے۔  اس طرح فلسطین پر یہودی قبضے کی طرح ہندو ریاست بھی آبادی کے تناسب کو تبدیل کررہی ہے تا کہ مقبوضہ علاقے پر اپنی کمزور گرفت کو مضبوط کرسکے۔ اس صورتحال پر پاکستان سمیت مسلم دنیا کے حکمرانوں کا رویہ ایسا ہے جیسے ان کا اس معاملے سے کوئی تعلق ہی نہیں ہے۔

 

ہندو ریاست اپنے اس مقصد کو حاصل کرنے کی راہ پر اس لیے چلنے میں کامیاب ہورہی ہے کیونکہ مسلم دنیا کی سب سے مضبوط اور طاقتور فوج کو باجوہ-عمران حکومت نے مقبوضہ کشمیر میں ہمارے بھائیوں اور بہنوں کے خلاف ہونے والے بدترین مظالم کے خاتمے کے لیے لائن آف کنٹرول پار کرنے سے روک رکھا ہے۔ دشمن یہ سب کچھ اس صورتحال میں بھی کرنے میں کامیاب ہورہا ہے جبکہ اس کی افواج کے افسران و سپاہی نسل پرستی اور ذات پات کے نظام کی وجہ سے اندرونی سطح پر بدترین تقسیم کا شکار ہیں اور کئی سو سپاہی اور افسران  برے سلوک سے دل برداشتہ ہو کر خودکشیاں کرچکے ہیں۔ اس کے برخلاف پاکستان کی مسلم افواج  کے افسران و سپاہی ایک جسم کی مانند ہے جس کی وجہ ان کی اللہ سبحانہ و تعالیٰ اور اس کے رسولﷺ سے محبت ہے۔    ہندو مشرکین مقبوضہ کشمیر میں اپنے منصوبوں کو اس وقت آگے بڑھارہے ہیں جبکہ پوری ہندو ریاست اندرونی تقسیم، کورونا وائرس کے پھیلاؤ اور معاشی مشکلات کی وجہ سے مفلوج ہوچکی ہے۔ اس کے برخلاف مسلم امت ایک امت ہے جو جہاد کے دوران اپنی افواج کی مدد کے لیے مسلسل اپنے بیٹوں کو قربان ہونے کے لیے بھیجتے رہیں گےاور اپنے گھروں کے مال و اسباب کو جہاد کی کامیابی کے لیے نچھاور کرتے رہیں گے۔ لعنتی کفار اپنے اہداف کے حصول کے لیے آگے بڑھ رہے ہیں جبکہ اللہ سبحانہ و تعالیٰ نے ان لوگوں سے کامیابی کا وعدہ کررکھا ہے جو اس کے دین کی کامیابی کے لیے اپنی جان نچھاور کرنے پر تیار ہیں،

يَا أَيُّهَا الَّذِينَ آمَنُوا إِن تَنصُرُوا اللَّهَ يَنصُرْكُمْ وَيُثَبِّتْ أَقْدَامَكُمْ

"اے اہل ایمان! اگر تم اللہ کی مدد کرو گے تو وہ بھی تمہاری مدد کرے گا اور تم کو ثابت قدم رکھے گا"(محمد، 47:7)۔  

 

جہاں تک بھارت کے سرپرست امریکا کا تعلق ہے تو جنگ کی صورت میں وہ ہندو ریاست کی زیادہ مدد نہیں کرسکتا کیونکہ اپنی گرتی ہوئی معیشت اور بزدل افواج کی وجہ سے وہ مسلم دنیا سے نکلنے کے لیے ایسے معاہدے کرنے کی کوشش کررہا ہے جس کے ذریعے وہ اپنی شکست پر پردہ ڈال سکےاور اپنی عزت بچا سکے۔  اس کے علاوہ مغربی دنیا کے قائدین اس بات سے باخبر ہیں کہ اگر ایک ایک بار خلافت کی افواج نکل پڑیں تو ان کو روکنا ناممکن ہوتا ہے کیونکہ ماضی میں خلافت  ناقابل شکست  رومیوں، فارسیوں اور منگولوں کو دفن کرچکی ہے۔

 

اے افواج پاکستان میں موجود مسلمانو!

ہمارے لیے مقبوضہ کشمیر کوئی تجارتی مال نہیں کہ جس سے ہم دستبردار ہوجائیں یا فروخت کردیں ، یہ ایک اسلامی سرزمین ہے جسے اللہ سبحانہ وتعالیٰ کے نام کی سربلندی  اور اسلام کے نفاذ کے لیے جہاد کے ذریعے فتح کیا گیا تھا، جس سے حاصل ہونے والا خراج اللہ کے حکم سے  امت کا حق ہے اور جس کی زمین کو ہمارے شہداء کے خون نے سیراب کیا ہے۔    اللہ سبحانہ و تعالیٰ کی جانب سے آپ پر یہ ذمہ داری عائد کی گئی ہے کہ تمام مقبوضہ مسلم علاقوں کو کفار کے قبضے سے بازیاب کرائیں۔ آپ میں جو غصہ اور جھنجھلاہٹ پیدا ہورہا ہے اس کی وجہ آپ کے سینوں میں موجود  ایمان اور آپ کی فوجی قیادت میں موجود غداروں کے احکامات کے درمیان موجود کھلا تضاد ہے جنہوں نے پیٹھ میں خنجر پیوست کرنے والے امریکا کے چند ڈالروں کے عوض خود کوفروخت کردیا ہے۔ آپ کی جھنجھلاہٹ اور غصہ صرف اسی صورت میں ختم ہوگا جب آپ نبوت کے نقش قدم پر خلافت کے قیام کے لیے نصرۃ فراہم کریں گے، اور پھر اس کے بعد آپ خلیفہ راشد کی قیادت میں تکبیرات بلند کرتے ، اللہ سبحانہ و تعالیٰ کی مدد پر بھروسہ کرتے ہوئے لائن آف کنٹرول پار کریں گے اور آپ ایک کے بعد ایک علاقوں کو انسانوں کی غلامی نے نجات دلائیں  اور اللہ سبحانہ و تعالیٰ کے کلمے کو بلند کریں گے۔

  

ولایہ پاکستان میں حزب التحرير کا میڈیا آفس

المكتب الإعلامي لحزب التحرير
ولایہ پاکستان
خط وکتابت اور رابطہ کرنے کا پتہ
تلفون: 
http://www.hizb-ut-tahrir.info
E-Mail: HTmediaPAK@gmail.com

Leave a comment

Make sure you enter the (*) required information where indicated. HTML code is not allowed.

دیگر ویب سائٹس

مغرب

سائٹ سیکشنز

مسلم ممالک

مسلم ممالک